سارک کانفرنس میں پاکستان کا پلڑا بھاری رہا، سابق بھارتی وزیر کا اعتراف

ممبئی: سابق بھارتی وزیر مانی شنکر ایر کا کہنا ہے کہ سارک وزرائے داخلہ کانفرنس میں پاکستان کا پلڑا بھاری رہا جبکہ بھارتی وزیرداخلہ نے سارک کوجنوبی ایشیا ئی تنظیم برائے’’تنازع ‘‘بنایا۔

غیرملکی خبر رساں ادارے کے مطابق سابق بھارتی وزیر اور کانگریس کے رہنما مانی شنکرایر نے بھارت کے ایک موقر اخبار میں ’’کس طرح راج ناتھ کے دورے نے پاکستان کو واضح برتری فراہم کردی‘‘ کے عنوان سے ایک مضمون لکھا ہے جس میں انہوں نے بھارتی وزیر داخلہ  راج ناتھ سنگھ کو کڑی تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔

مانی شنکر کا کہنا ہے کہ سارک وزرائے داخلہ میں پاکستان کا پلڑا واضح طور پر بھاری رہا اور اس کا اعتراف امریکا نے بھی کیا جبکہ بھارت کے وزیر داخلہ راج ناتھ  کی سارک کانفرنس میں کی جانے والی تقریر پر کسی کی دلچسپی نہیں تھی اور نا ہی ان کے خطاب کو بین الاقوامی پذیرائی مل سکی۔

مانی شنکر کا کہنا ہے کہ امریکا کے بیان میں بھی پاکستانی وزیر داخلہ چوہدری نثار کے مؤقف کی تائید نظرآئی جبکہ راج ناتھ نے سارک کو جنوبی ایشیائی تنظیم برائے تنازعہ بنادیا۔

واضح رہے کہ گزشتہ ماہ اسلام آباد میں سارک وزرائے داخلہ کانفرنس ہوئی تھی جس میں چودہری نثار نے بھرپور انداز میں پاکستان میں بھارتی مداخلت اور مقبوضہ کشمیرمیں جارحیت کے حوالے سے موقف پیش کیا تھا۔






Comments are Closed