وائٹ ہاؤس کو فائرنگ کے بعد بند کردیا گیا

واشنگٹن: 

وائٹ ہاؤس کے باہر فائرنگ سے ایک شخص کے زخمی ہونے کے بعد اسے بند کردیا گیا ہے۔

امریکی میڈیا رپورٹس کے مطابق وائٹ ہاؤس کے باہر فائرنگ کی آواز سنی گئی جس کے بعد سیکیورٹی فورسز نے ہنگامی بنیادوں پر وائٹ ہاؤس اور اس کے اطراف کے علاقوں کا محاصرہ کرلیا، وائٹ ہاؤس کے دروازے بند کردیے گئے اور کسی کو آنے جانے کی اجازت نہیں دی جارہی۔

امریکا خفیہ ایجنسی نے اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ پر واقعے کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ  ابتدائی طور پر ایک شخص نے وائٹ ہاؤس کے باہر خود کو گولی مار لی جس سے وہ شدید زخمی ہے۔ فائرنگ کے واقعے میں ایک مرد کے علاوہ کسی اور کے زخمی ہونے کی اطلاع نہیں ہے جب کہ میڈیکل ٹیمیں موقع پر پہنچ کر زخمی کوطبی امداد دے رہی ہیں۔

امریکی میڈیا کے مطابق صدر ڈونلڈ ٹرمپ وائٹ ہاؤس میں نہیں ہیں اور وہ اس وقت  فلوریڈا میں موجود ہیں۔ امریکی صدر کو وائٹ ہاؤس کے باہر ہونے والی فائرنگ سے متعلق آگاہ کردیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ وائٹ ہاؤس کے باہر فائرنگ اور تکلیف دہ واقعات  کوئی غیر معمولی بات نہیں، اس کی حالیہ مثال 23 فروری کا واقعہ ہے جس میں ایک خاتون نے وائٹ ہاؤس کے سیکیورٹی بیریئر سے گاڑی ٹکرا دی تھی۔






Comments are Closed